Home / General / وحید انتظامیہ کا کمیشن آف نیشنل انکوائری میں نشید کی تازہ ترین نامزدگی پر اظہار مایوسی

وحید انتظامیہ کا کمیشن آف نیشنل انکوائری میں نشید کی تازہ ترین نامزدگی پر اظہار مایوسی

مالے، مالدیپ، 25 مئی 2012ء/پی آرنیوزوائر/–

صدر وحید کی انتظامیہ نے کمیشن آف نیشنل انکوائری (CNI) میں شمولیت کے لیے متفقہ معیار پر پورا اترنے والے موزوں امیدوار کی نامزدگی میں سابق صدر نشید کی مستقل ناکامی پر مایوسی کا اظہار کیا ہے۔

انتظامیہ نے دولت مشترکہ کے خصوصی سفیر سر ڈان میک کینن کے ساتھ سی این آئی کے حوالہ جاتی شرائط پر رضامندی ظاہر کی ہے، جس میں وہ معیار بھی شامل ہے جس پر تمام امیدواروں کا پورا اترنا ضروری ہے، تاکہ وہ کمیشن کے لیے خدمات انجام دے سکیں۔ انتظامیہ نے سابق صدر نشید کو کمیشن کے لیے ایک امیدوار نامزد کرنے کے لیے مدعو کیا تھا۔

تازہ ترین نامزدگی لیفٹیننٹ کرنل زبیر احمد مانک کی ہے جو مالدیپ کی قومی دفاعی افواج میں خدمات انجام دے رہے ہیں اور متفقہ حوالہ جاتی شرائط کے مطابق انڈرگریجویٹ سند کے حامل ہونے کی شرط پوری نہیں کرتے۔

سابق صدر نشید کی جانب سے عموماً ناقابل قبول امیدواروں کی بارہا تجویز پیش کرنا ان کے عدم سنجیدگی اور عدم تعاون کے رویے کو ظاہر کرتا ہے۔

انتظامیہ پہلے ہی دولت مشترکہ کی تجویز پر سی این آئی کی حقیقی حوالہ جاتی شرائط کو تبدیل کرنے اور سی این آئی کے شریک چیئر کی حیثیت سے ایک غیر ملکی جج کی تقرری پر رضامند ہو چکی ہے۔

صدر وحید کی انتظامیہ کے ترجمان مسعود عماد نے کہا ہے کہ :

“انتظامیہ نے بارہا سابق صدر نشید کو مدعو کیا کہ وہ سی این آئی کے لیے ایک موزوں امیدوار نامزد کریں۔ موزوں امیدوار کے معیار پر سر ڈان میک کینن کے ساتھ اتفاق ہو چکا ہے اور وہ اسے سی این آئی کے اراکین کی حیثیت سے زیر غور تمام امیدواروں پر لاگو کریں گے۔ یہ ہمارا معیار نہیں؛ یہ معیار دولت مشترکہ اور سی ایم اے جی کے ساتھ متفقہ ہے، جس کی نمائندگی سر ڈان کر رہے ہیں۔ ہم دولت مشترکہ کی خواہش کے پابند اور ان شرائط کے ساتھ سختی سے چمٹے ہوئے ہیں۔ ہم اپنے جمہوری اور متفقہ راستے سے نہیں ہٹیں گے۔”

ذریعہ: جمہوریہ مالدیپ

Leave a Reply

Scroll To Top