Home / General / افغان وائرلیس کا 5,000 مقامی افغان ملازمین حاصل کرنے کا ہدف

افغان وائرلیس کا 5,000 مقامی افغان ملازمین حاصل کرنے کا ہدف

کابل، افغانستان، 30 مارچ 2012ء/پی آرنیوزوائر-یوایس نیوزوائر/–

افغانستان کے معروف ٹیلی کام آپریٹر اور ملک کے سب سے بڑے نجی اداروں میں سے ایک افغان وائرلیس (“اے ڈبلیو سی سی”) نے ایک 4,300 سے زائد مقامی افغان ملازمین کو حاصل کرنے میں نمایاں ابتداء کی ہے۔ اے ڈبلیو سی سی افغان عوام سے اپنی جاری وابستگی کو وظاہر کرنے کے لیے اپنی 10 ویں سالگرہ سے قبل 5,000 مقامی افراد کو براہ راست ملازم رکھنے کا مختصر مدتی ہدف رکھتا ہے۔ بالواسطہ اے ڈبلیو سی سی ٹاپ اپ کارڈ ری سیلر، پبلک کال آفس (پی سی او) اراکین اور سم کارڈ ڈیلرز کے ذریعے 100,000 سے زائد افغان کو روزگار کے مواقع دینے میں شامل ہے۔ اے ڈبلیو سی سی کی افراد کار اس وقت 97 فیصد سے زائد افغان باشندوں پر مشتمل ہے جو ظاہر کر رہی ہے کہ اے ڈبلیو سی سی افغانوں کی رہنمائی میں انہی کی جانب سے چلایا جانے والا ایک حقیقی ادارہ ہے۔

4,300 مقامی ملازمین اے ڈبلیو سی سی کے “افغان ڈیولپمنٹ پروگرام” (اے ڈی پی) سے فائدہ اٹھاتے ہیں۔ اے ڈی پی ایک منصوبہ ہے جو اے ڈبلیو سی سی اپنے مقامی عملے کو تربیت کی فراہمی اور انہیں برقرار رکھنے کی خدمات کے لیے استعمال کرتا ہے۔ اے ڈبلیو سی سی کے مینیجنگ ڈائریکٹر امین رامن نے افراد کار کے وسائل میں اے ڈبلیو سی سی کی سرمایہ کاری کے حوالے سے یہ کہا “اے ڈبلیو سی سی کی طویل المیعاد ترقی اس کے ملازمین کی کامیابیوں پر منحصر ہے۔ اے ڈبلیو سی سی اپنے ملازمین میں بذریعہ تربیت و پیشرفت سرمایہ کاری کرتا ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ ایک بہتر افغانستان کے لیے اے ڈبلیو سی سی اہم کردار ادا کرے اور اپنے ملازمین کو بہتر زندگیاں فراہم کرے۔ ہمارے انتظامی عملے کے تمام اراکین کام کے ایسے ماحلول کی امید رکھتے ہيں جہاں وہ ملازمین کو پیشہ ورانہ طور پر ترقی کرنے، انفرادی طور پر بہتر ہونے اور بالآخر اپنی مکمل صلاحیتوں کا ادراک کرنے میں مدد دیں گے۔”

اے ڈبلیو سی سی کے ہیومن ریسورس مینیجر جناب نادر عبد اللہ نے اے ڈبلیو سی سی کی مقامی بھرتی کی کوشش پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ “اے ڈبلیو سی سی ہر روز مقامی افغان امیدواروں کو متحرک انداز میں بھرتی کرتا ہے۔ اے ڈبلیو سی سی تین طریقوں نے افراد کار کی ترقی کے لیے مواقع تخلیق کرتا ہے:

1۔ دوران ملازمت تجربات

2۔ دوران ملازمت تعلقات بذریعہ نیٹ ورکنگ اور فیڈبیک

3۔ باضابطہ تربیتی مواقع”

اے ڈبلیو سی سی کے چیئرمین احسن بیات اس نیٹ ورک کو بنانے اور چلانے میں افغان باشندوں کو دیکھ کر فخر محسوس کرتے ہیں “اے ڈبلیو سی سی ٹیلی کمیونی کیشن رہنما کی حیثیت برقرار رکھنے کے لیے کوشاں ہے اور ہمیشہ ہی افغان مرد و عورتوں کو ملازم رکھنے میں دلچسپی رکھتا ہے جو ادارے کے مستقبل میں حصہ ڈال سکیں۔ افغان عوام تربیت اور دوران ملازمت تجربے کے ذریعے ٹیلی کام کے شعبے پر تیزی سے گرفت حاصل کی ہے اور اب اے ڈبلیو سی سی کے روزمرہ کاموں کے کئی پہلوؤں کو چلا رہے ہیں۔  اس کے بدلے ہم ان کے اہل خانہ کے لیے مدد فراہم کر رہے ہیں اور ایک بہتر زندگی بنا رہے ہیں۔ اے ڈبلیو سی سی میں تجربہ حاصل کرنے والے کئی افغان باشندوں نے اپنے کاروبار بھی شروع کیے ہیں یا دیگر اداروں میں شمولیت اختیار کی ہے جس نے افغان افرادی قوت کو بہتر بنانے میں مزید مدد دی ہے۔

ملازمت کے مواقع کے لیے اے ڈبلیو سی سی سے www.afghan-wireless.com پر رابطہ کیجیے اور افغان عوام سے اے ڈبلیو سی سی کی وابستگی کا حصہ بن جائیں۔

افغان وائرلیس کے بارے میں- کابل میں واقع اے ڈبلیو سی سی افغانستان میں تقریباً 4,000,000 سبسکرائبرز کو خدمات پیش کرتا ہے؛ اور افغانوں کے لیے سب سے بڑے اداروں میں سے ایک ہے۔ اے ڈبلیو سی سی 4,300 سے زائد براہ راست ملازمین رکھتا ہے اور بالواسطہ 100,000 دیگر افراد بھی۔ اے ڈبلیو سی سی گھریلو اور کاروباری صارفین کے لیے وائرلیس اور براڈبینڈ کمیونی کیشنز حل فراہم کرنے کا رہنما ادارہ ہے۔ اضافی معلومات www.afghan-wireless.com پر یا بذریعہ ٹیلی فون سسٹمز انٹرنیشنل (“ٹی ایس آئی”) کی ویب سائٹ www.tsiglobe.com پر دستیاب ہیں۔

رابطہ: البرٹو لوپیز، a.lopez@tsiglobe.com،  +97 142278695

Leave a Reply

Scroll To Top